وزیراعظم شہبازشریف اوربرطانوی ہم منصب کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

20

وزیراعظم شہبازشریف کا برطانوی ہم منصب سے ٹیلیفونک رابطہ، افغان صورت حال اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے شہبازشریف کووزیراعظم کے منصب پرفائزہونے پرمبارک باد دی اورپاکستان کے ساتھ تعلقات کومزید فروغ دینے کی خواہش پرزوردیا۔

وزیراعظم شہبازشریف نے ملکہ برطانیہ کی تاج پوشی کی پلاٹینم جوبلی تقریبات پراپنے ہم منصب کومبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کوبہت اہمیت دیتا ہے۔

شہبازشریف نے تجارت اورسرمایہ کاری کی شراکت پرخصوصی زوردیتے ہوئے مختلف شعبوں میں برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو مضبوط بنانے کے عزم کا بھی اعادہ کیا۔

وزیراعظم نے دونوں ممالک کے درمیان قریبی روابط پیدا کرنے میں سولہ لاکھ پاکستانیوں کے مثبت کردارکوسراہتے ہوئے پاک برطانیہ سفارتی تعلقات کے قیام کی 75 ویں سالگرہ کوشایان شان طریقے سے منانے کی اہمیت پرزوردیا۔

شہبازشریف نے مختلف شعبوں میں تعلقات کومزید فروغ دینے کے لیے 10 سالہ روڈ میپ تیارکرنے کی تجویزدی۔

پاکستانی وزیراعظم نے باہمی روابط کومزید مضبوط بنانے، دوطرفہ شراکت داری کوبڑھانے اور برطانیہ کی جانب سے پاکستان میں تعلیم، صحت اوردیگرسماجی شعبوں کے فروغ کے لیے کیے گئے کاموں کوبھی سراہا۔

اس دوطرفہ گفتگومیں وزیراعظم شہبازشریف نے افغانستان میں امن واستحکام کی اہمیت اورانسانی بحران سے بچنے کے لیے کوششیں تیزکرنے کی ضرورت پرزوردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ بین الاقوامی برادری کےعبوری افغان حکومت کے ساتھ تعمیری، سفارتی اورسیاسی روابط پائیدارامن اوراستحکام کے لیے بہت ضروری ہیں۔

وزیراعظم نے مقبوضہ جموں وکشمیرمیں بھارت کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کواجاگرکیا اوراس تنازع کے پُرامن حل کی اہمیت اورجنوب ایشیائی خطے میں اسٹریٹجک توازن برقراررکھنے کی ضرورت پربھی زوردیا۔

مزید پڑھیں:  غربت کی ستائی ماں بچوں سمیت کنویں میں کود گئی

دونوں وزرائے اعظم نے یوکرین کی صورت حال اورباہمی دلچسپی کے دیگرامورپربھی تبادلہ خیال کیا۔ وزیراعظم شہبازشریف نے اپنے برطانوی ہم منصب کودورہ پاکستان کی دعوت بھی دی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.