کراچی؛ 18 سال بعد قتل کے مقدمے میں نامزد ملزم کو سزا

19

تفصیلات کے مطابق کراچی سٹی کورٹ میں سیشن عدالت غربی نے 2006 میں قتل کے مقدمے میں ملوث ملزم کوعمر قید بامشقت سزا سنائی اور 5 لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کردیا۔عدالت نے فیصلے میں کہا کہ جرمانہ کی عدم ادائیگی پر مزید 6 ماہ قید کاٹنی ہوگی۔ علاوہ ازیں استغاثہ کے مطابق مقدمے میں نامزد ملزم قیوم تاحال مفرور ہے، ملزمان نے بلدیہ ٹاؤن میں مقتول اور اس کے دوستوں پر فائرنگ کی تھی۔
استغاثہ کے مطابق فائرنگ سے جمیل جاں بحق جبکہ اس کا دوست وسیم زخمی ہوا، ملزمان کیخلاف 7 سے زائد گواہان عدالت میں پیش ہوئے، واقعہ کے 15 سال تک ملزم مفرور رہے جبکہ ملزم اقبال نے 2021 میں سندھ ہائیکورٹ میں ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست دائر کی تھی۔تاہم عدالت نے درخواست مسترد کرتے ہو ملزم کو جیل بھیج دیا تھا۔ پراسیکیوٹر عارف ستائی نے بتایا کہ دوران ٹرائل وکیل ملزم نے گواہوں پر مکمل جرح کی تاہم ملزم کے حق میں کوئی ایسی بات سامنے نہیں آسکی۔ واقعہ کا مقدمہ تھانہ بلدیہ ٹاؤن میں درج کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں:  ہیلی کاپٹرلاپتہ،وزیراعظم کا آرمی چیف سے ٹیلی فونک رابطہ
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.