پی ٹی آئی کیخلاف الیکشن کمیشن کا فیصلہ معطل، بلے کا نشان بحال

38

عدالت نے بلے کا نشان بحال کرتے ہوئے الیکشن کمیشن و دیگر فریقین کو نوس جاری کر دیا۔انٹرا پارٹی انتخابات اور انتخابی نشان واپس لینے سے متعلق درخواست پر پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس کامران حیات میاں خیل نے ریمارکس دیے کہ صاف نظر آرہا ہے کہ ایک سیاسی جماعت کو الیکشن سے باہر کیا جا رہا ہے۔

پشاور ہائیکورٹ نے پی ٹی آئی انٹرا پارٹی انتخابات کا نیتجہ کالعدم قرار دینے کے خلاف درخواست پر تحریری فیصلہ جاری کردیا۔
تحریری فیصؒے میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کا 22 دسمبر کا فیصلے معطل کیا جاتا ہے اور الیکشن کمیشن کو ہدایت جاری کی جاتی ہے کہ وہ پی ٹی آئی کا سرٹیفکیٹ ویب سائٹ پر جاری کریں۔پشاور ہائیکورٹ نے کہا کہ الیکشن کمیشن پی ٹی آئی کا انتخابی نشان بیٹ بھی بحال کریں۔ الیکشن 8 فروری کو ہونے جارہے ہیں اور 13 جنوری کو انتخابی نشان الاٹ ہونگے۔

مزید پڑھیں:  75 ویں جشن آزادی پر مزار اقبال پر گارڈز کی تبدیلی
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.