بدنام زمانہ سیریل کلر چارلس سوبھراج کی رہائی کا حکم

27

غیرملکی میڈیا کے مطابق نیپالی عدالت نے 78 سالہ بدنام زمانہ مجرم چارلس سوبھراج کو بڑھتی عمر اور صحت کی خرابی کے باعث رہا کرنے کا حکم دیا۔ چارلس سوبھراج عارضہ قلب میں مبتلا ہے اور اسے اوپن ہارٹ سرجری کی ضرورت ہے۔عدالتی ترجمان کے مطابق نیپالی سپریم کورٹ کی دور رکنی بینچ نے چارلس سوبھراج کو رہائی کے 15 دن کے اندر ملک سے ڈی پورٹ کرنے کا بھی حکم دیا۔چارلس سوبھراج نیپال کی جیل میں 19 سال سے 1975 میں دو سیاحوں کے قتل پر عمر قید کی سزا کاٹ رہا ہے۔ چارلس سوبھراج سے متعلق سیکڑوں مبینہ کیسز تاحل حل نہیں ہوسکے ہیں۔ویتنام میں فرانس کے زیرانتظام علاقے سائیگون میں پیدا ہونے والے چارلس سوبھراج نے پاکستان، بھارت، نیپال ،ترکی ،ایران اور دیگرکئی ممالک میں جرائم کیے۔چارلس سوبھراج مختلف ملکوں میں گرفتار بھی ہوا لیکن ہربار وہ جیل سے فرار ہونے میں کامیاب ہوا۔ سوبھراج کی جیل حکام کو دھوکہ دے کر فرارہونے کی صلاحیت نے اسے عالمی شہرت دلائی۔ چارلس سوبھراج کی زندگی پر ایک ٹی وی سیریز’ دی سرپنٹ‘ بھی بنائی گئی تھی۔چارلس سوبھراج نے ایک انٹرویو میں 1972 سے 1976 کے دوران متعدد لوگوں کے قتل کا اعتراف کیا تھا تاہم بعد میں وہ اپنے بیان سے مکر گیا تھا۔

مزید پڑھیں:  شریف خاندان صرف ڈرامے رچانے کے لئے اقتدار میں آتا ہے، پرویز الٰہی
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.