ملتانی مٹی سے گھر بیٹھے جھریوں جیسے بڑے مسئلے پر قابو پائیں

48

ملتانی مٹی کا استعمال ہر موسم میں جلد کی خوبصورتی کو بڑھانے کا کام کرتا ہے اور ہم سب کو معلوم ہے کہ یہ سب سے سستی بیوٹی پراڈکٹ ہے۔

اس میں کیلشیم بینٹونائٹ، منرلز، میگنیشیم کلورائیڈ، اینٹی انفلامینٹری جز اور میلانن پایا جاتا ہے جو کہ آپ کو خوبصورت بنانے میں مدد دیتا ہے۔

فائدے:

٭ ایکنی:

ملتانی مٹی کو چہرے پر لگانے سے ہر قسم کی ایکنی کنٹرول میں آ جاتی ہے کیونکہ اس میں کلورائیڈ موجود ہوتا ہے جس کی ٹھنڈک سے دانوں کی اندرونی سطح میں موجود گندگی خُشک ہو کر پانی سے صاف ہو جاتی ہے اور جلد چمکدار ہو جاتی ہے۔

٭ بلیک اور وائٹ ہیڈز:

چہرے پر بلیک اور وائٹ ہیڈز کی وجہ سے اکثر خواتین پریشان نظر آتی ہیں کیونکہ یہ خوبصورتی کو ماند کر دیتے ہیں بہر حال آپ ایک چمچ ملتانی مٹی کو آدھے چمچ پانی میں مکس کریں اور اس کو اس جگہ لگا لیں جہاں ہیڈز نکل آئے ہیں۔

ساتھ ہی ایک برش کی مدد سے یا پھر انگلیوں کی مدد سے رگڑتے رہیں۔ اس سے ہیڈز بھی نکل جائیں گی اور جلد پر خارش بھی نہیں ہوگی۔

٭ رنگ صاف:

ہر عورت چاہتی ہے کہ اس کا رنگ صاف ستھرا اور نکھرا ہوا نظر آئے اس کے لئے ملتانی مٹی کو دو چمچ دودھ میں مکس کریں اور چہرے پر لگا لیں۔

اگر آپ خشک دودھ میں ملتانی مٹی اور لیموں کا رس مکس کر کے چہرے پر روزانہ 20 منٹ کے لئے لگائیں گی تو اس سے جلد پر تازگی بھی آ جائے گی اور رنگ بھی نکھر جائے گا۔

مزید پڑھیں:  امریکا اور کینیڈا میں شدید سردی؛ کئی علاقوں میں درجہ حرارت منفی 70 تک گرنے کا امکان

٭ جھریاں:

اینٹی ایجنگ اثرات یعنی جھریاں چھپانا چاہتی ہیں تو روزانہ ملتانی مٹی کو ایک انڈے کی سفیدی میں مکس کر کے لگائیں اس سے جھریاں کنٹرول میں آ جائیں گی۔

٭ داغ دھبے:

اگر آپ کی بھی جلد پر داغ دھبے اور نشانات پڑ گئے ہیں تو ایک چمچ ملتانی مٹی میں ایک چمچ ایلویرا جیل مکس کر کے چہرے پر لگائیں اس سے داغ دھبے بھی صاف ہو جائیں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.