بھاری فیسیں ادا کرنے کے باوجود پاسپورٹ بنوانے والے رُل گئے

کئی کئی ماہ بعد بھی پاسپورٹ نہیں مل رہے، شہریوں کا شکوہ

109

نیا پاسپورٹ بنوانا ہو یا پھر پرانے کی تجدید درکا ہو، شہریوں کیلئے اس حق کا حصول انتہائی دشوار ہوگیا ہے۔ نارمل کیسز ہوں یا پھر بھاری فیسوں والے ارجنٹ، ایگزیٹو اور فاسٹ ٹریک کا معاملہ، پاسپورٹ آفس کا بیک لاگ طویل سے طویل ہوتا جارہا ہے۔وفاقی دارالحکومت سمیت پورے ملک میں پاسپورٹ کیلئے درخواست دینے والے مہینوں سے خوار ہو رہے ہیں، بیرون ملک روزگار یا تعلیم کے مواقع بچانے کیلئے مجبوراً بھاری فیسیں بھرنے والوں کو پاسپورٹ نہیں بلکہ تاریخ پر تاریخ مل رہی ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ ویزے کی پرابلم الگ ہے ، ہمارا ویزا ایکسپائر ہو جائے گا، ہم نے ارجٹ پاسپورٹ جمع کرایا تھا آج ملنا تھا صبح سے آئے ہوئے ہیں ابھی تک نہیں ملا، اب کہہ رہے ہیں کہ بعد میں آئیں یا کل آکر پتہ کریں۔پاسپورٹ کیلئے نارمل فیس بھرنے والے بھی دہائیاں دے رہے ہیں، کہتے ہیں کہ نارمل فیس پر پاسپورٹ بننے دیا تھا ڈیڑھ ڈیڑھ ماہ ہوگئے پاسپورٹ نہیں مل رہا، فیسیں پوری لے رہیں لیکن سہولیات کوئی نہیں۔

ملک بھر میں تو شہریوں کیلئے پاسپورٹس کا حصول محال ہے ہی بیرون ملک مقیم پاکستانی بھی آن لائن سہولت سے استفادہ کرنے میں شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

مزید پڑھیں:  ٹانک: سیلاب سے پل ٹوٹنے سے درجنوں دیہات متاثر
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.