اقوام متحدہ کا افغانستان میں جرمن سفارت کار کی بطور نائب سفیر نامزدگی کا فیصلہ

18

اقوام متحدہ نے افغانستان میں جرمن سفارت کار مارکوس پوٹزیل کی بطور نائب سفیر نامزدگی کا فیصلہ کیا ہے۔

اقوام متحدہ کے نائب ترجمان فرحان حق نے بتایا کہ مارکوس پوٹزیل یواین افغانستان مشن (یو این اے ایم اے) کے بطور انچارج اپنی خدمات سرانجام دے چکے ہیں۔

سفارت کاری کا وسیع تجربہ رکھنے والے پوٹزیل اس سے قبل سن 2014 سے 2016 کے درمیان کابل میں جرمن سفیر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔پوٹزیل کے نام کا اعلان افغانستان میں اقوام متحدہ کی اعلیٰ نمائندہ ڈیبورہ لائیونز کی مدت کار ختم ہوجانے کے بعد کیا گیا ہے۔

لائیونز کا افغانستان کی موجودہ صورتحال کے حوالے سے کہنا ہے کہ جب میں نے یہ ذمہ داری قبول کی تھی تو میں نے اس افغانستان کا تصور نہیں کیا تھا جسے میں اب چھوڑ کر جارہی ہوں۔میرا دل ایسی افغان لڑکیوں اور خواتین کے لیے مجروح ہے، جنہیں طالبان کے فرمان کی وجہ سے اسکولوں اور دفاتر سے دور رکھا گیا ہے۔‘‘

لائیونز کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان میں میری بہنیں اس وقت جن حالات میں جی رہی ہیں ایسے میں انہیں چھوڑ کر جانا،ایک خاتون کی حیثیت سے میرے لیے بہت زیادہ تکلیف دہ ہے۔‘‘

افغانستان میں گزشتہ تقریباً دو دہائیوں کے دوران تمام سیاسی پیش رفت اور انسانی امداد میں رابطہ کار کے طور پر یو این اے ایم اے نے اہم کردار ادا کیا ہے۔ اقوام متحدہ کا یہ ادارہ انسانی حقوق کی صورت حال پر بھی نگاہ رکھتا ہے۔ تاہم ملک پر اقتدار حاصل کرنے کے بعد سے افغانستان میں اقوام متحدہ کی سرگرمیاں طالبان کی جانب سے تعاون پر منحصر ہیں۔

مزید پڑھیں:  دن بھرمیں کتنی بار کھانا کھایا جائے؟ ماہرین نے درست تعداد بتا دی

اقوام متحدہ کا یہ ادارہ دیگر ایجنسیوں کے ساتھ مل کر تقریباً 4.4 ارب ڈالر کا فنڈ حاصل کرنے کی کوشش کر رہا ہے تاکہ رواں برس افغانستان میں انسانی امداد کی ضرورتیں پوری کی جا سکیں۔

یاد رہے، مارکوس پوٹزیل افغانستان کے لیے اقوام متحدہ کے نئے نائب نمائندہ ہوں گے۔ وہ سنہ 2014 سے 2016 کے درمیان کابل میں جرمنی کے سفیر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.