یوٹیلٹی اسٹورز پر گھی 300روپے کلو ملے گا، مریم اورنگزیب

31

پریس کانفرنس میں وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا 2018 میں آٹے کی قیمت35 روپے کلو تھی جو پچھلے 4 سال کے دوران90 سے100روپے کلو اور گھی 550 روپے سے 600 روپے فی کلو فروخت ہوتا رہا، سابق حکومت نے 4 سال مافیا اور کارٹلز کی جیبیں بھریں، عوام کو مہنگائی کی چکی میں پیسا گیا۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کو مہنگائی کے اثرات سے محفوظ رکھنے کیلیے سبسڈی اور ریلیف دینے کے اقدامات کر رہی ہے۔ سستا آٹا اسکیم کے بعد ملک میں سستا گھی اسکیم شروع کی جا رہی ہے۔ خیبرپختونخوا میں700 موبائل وینز اور600سیلز پوائنٹس پر آٹے کا 10کلو گرام کا تھیلا 400 روپے میں فراہم کیا جا رہا ہے۔یوٹیلٹی اسٹیشنری پوائنٹس یا موبائل وینز جن علاقوں میں نہیں پہنچ پا رہیں وہاں عوام ٹال فری نمبر 080005590 پر شکایت درج کروا سکتے ہیں۔ آٹے کے معیار یا قیمتوں میں فرق کے حوالے سے شکایت 051111123570 پر کروائی جا سکتی ہے۔9 جون کو گھی پر سبسڈی کا آغاز کیا گیا جس کا مجموعی حجم3ارب روپے ہے۔ یوٹیلٹی اسٹورز پر آٹا، چینی اور دیگر اشیا کی کمی کی شکایات کیلیے مانیٹرنگ نظام قائم کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں:  لاہوریوں کو 3 سال پرانا گوشت کھلائے جانے کا انکشاف
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.