بھارتی الیکشن؛ مقبوضہ کشمیر میں جدوجہدِ آزادی کے اسیر رہنما کی شاندار کامیابی

4

بھارتی میڈیا کے مطابق عام انتخابات کے تمام نتائج سامنے آنے کے بعد بی جے پی حکومت بنانے کی پوزیشن میں آگئی۔ اس بار پہلی مرتبہ مقبوضہ کشمیر میں الیکشن ہوئے۔خیال رہے کہ 5 اگست 2019 کے سیاہ قانون سے قبل مقبوضہ کشمیر میں انتخابات ایک الگ ریاست کی حیثیت سے ہوتے تھے تاہم مقبوضہ کشمیر کو وفاق میں ضم کرنے کے بعد پہلی بار پورے بھارت کے ساتھ مقبوضہ کشمیر میں بھی الیکشن ہوئے۔
مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے الیکشن میں بارہ مولہ کی سیٹ سے آزاد امیدوار شیخ عبدالرشید عرف انجینئر رشید نے بھارت نواز سابق وزیراعلیٰ مقبوضہ کشمیر عمر عبداللہ کو شکستِ فاش دیدی۔
پابند سلاسل انجینئر رشید کی انتخابی مہم ان کے 24 سالہ بیٹے ابرار نے چلائی تھی۔ اسیر رہنما کے بیٹے نے حلقے میں گھر گھر جاکر ووٹرز کو والد کا پیغام پہنچایا اور عوام کو متحرک کیا۔بارہ مولہ کی نشست پر اسیر رہنما انجنیئر رشید کی جیت کا اعلان ہوتے ہی ان کے حامی کی بڑی تعداد سڑکوں پر نکل آئی اور جدوجہد آزادیٔ کشمیر کے حق میں نعرے بازی کی۔

مزید پڑھیں:  لنڈی کوتل میں ہیروئن بنانے والی فیکٹری پکڑی گئی، دو ملزمان گرفتار
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.