شام، دمشق میں اسرائیل کے ایران اور حزب اللہ کے ٹھکانوں پر میزائل حملے

17

شام میں اسرائیل کی جانب سے ایران اور حزب اللہ کے ٹھکانوں پر نئے میزائل حملے کیے گئے ہیں۔ شام کے عسکری ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ ملکی فضائی دفاع نے دارالحکومت دمشق کے جنوب میں اسرائیل کی جانب سے کیا گیا میزائل حملہ پسپا کر دیا ہے۔

شامی عسکری ذرائع کا کہنا تھا کہ کل پیر کے روز اسرائیلی فضائی حملہ گولان کی سمت سے کیا گیا تھا اور اس میں دارالحکومت دمشق کے جنوب میں کچھ مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔ شامی فضائی دفاعی نظام نے زیادہ تر اسرائیلی میزائلوں کو مار گرایا جبکہ کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ شام کی سانا خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی میزائل حملے میں مالی نقصان پہنچا ہے۔

شام میں انسانی حقوق کی صورتحال پر نظر رکھنے والے ادارے سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس کے ڈائریکٹر رمی عبدالرحمٰن نے کہا ہے کہ اسرائیل نے ایران اور لبنانی حزب اللہ سے تعلق رکھنے والے مقامات کو میزائلوں سے نشانہ بنایا۔ انسانی حقوق کے گروپ کے مطابق حکومت کی فضائی دفاعی بیٹریاں دارالحکومت دمشق کے جنوب میں واقع کسوا کے علاقے میں موجود ہیں۔

رمی عبدالرحمٰن نے کہا کہ حکومت کے فضائی دفاعی نظام نے ان میں سے متعدد میزائلوں کو مار گرانے میں کامیابی حاصل کی تاہم نقصان سے ظاہر ہوتا ہے کہ کم از کم دو میزائل ان مقامات پر اپنے ہدف تک پہنچنے میں کامیاب ہو گئے۔

واضح رہے کہ اسرائیل ان حملوں کی ذمہ داری قبول کیے بغیر شام کے اندرونی علاقوں میں ایران اور لبنان کی حزب اللہ ملیشیا کے ٹھکانوں پر بمباری کر رہا ہے۔

مزید پڑھیں:  وادی تیراہ میں امن لشکر کا کمانڈر بھتیجے سمیت قتل

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.