بیجنگ میں کورونا پابندیوں میں بتدریج کمی

16

چین نے دارالحکومت بیجنگ میں کورونا پابندیوں میں کمی کر دی ہے، جس کے تحت اب ریستوران میں بیٹھ کر کھانا کھانے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

بیجنگ میں بلدیاتی حکام نے آج سے انسدادِ کورونا وائرس پابندیوں میں نرمی کر دی ہے، جس سے لگ بھگ ایک ماہ کے عرصے میں پہلی بار ریستورانوں میں بیٹھ کر کھانا کھانے کا عمل بحال کرنے کی اجازت مل گئی ہے۔

چینی دارالحکومت میں اپریل کے آخر میں نئے مصدقہ متاثرین کی یومیہ تعداد میں اضافے کے بعد ریستورانوں کے اندر بیٹھ کر کھانا کھانے پر پابندی لگادی گئی تھی۔ مئی میں کئی روز تک یومیہ تقریباً 50 نئے متاثرین کی اطلاع دی گئی۔

شہر کے حکام نے کچھ علاقوں کے علاوہ، پابندی ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے، کیونکہ حالیہ دنوں میں نئے متاثرین کی تعداد میں کمی آئی ہے۔

بلدیاتی حکام بیجنگ کے بیشتر علاقوں میں دفتری ملازمین کو گھروں کے بجائے دفاتر میں کام کرنے کی اجازت دے رہے ہیں۔

سیاحتی مقامات، تفریحی باغات، فلم تھیٹرز اور دیگر مقامات کو وہاں آنے والے افراد کی تعداد کی مقررہ حد کے ساتھ دوبارہ کھول دیا گیا ہے۔

حکام آئندہ ہفتے سے پرائمری، جونیئر ہائی اور دیگر اسکولوں میں آن لائن اسباق ختم کرنے اور بچوں کو براہِ راست کلاسوں میں مرحلہ وار لوٹنے کا کہنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

حکام کو توقع ہے کہ سخت پابندیوں میں نرمی سے بیجنگ کی معیشت بحال ہوگی جو سست روی کی وجہ سے متاثر ہوئی ہے۔

مزید پڑھیں:  لاہور؛ شوہر کا خاتون اور مرد دوستوں کے ہمراہ بیوی پر بہیمانہ تشدد
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.