سندھ حکومت کی کراچی میں بلدیاتی انتخابات مزید تین ماہ ملتوی کرنے کی سفارش

12

بلدیاتی انتخابات

سندھ حکومت نے کراچی میں بلدیاتی انتخابات مزید تین ماہ ملتوی کرنے کی سفارش کردی۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے کراچی میں بلدیاتی انتخابات سے متعلق فریقین سے مشاورت مکمل کرلی، الیکشن کمیشن کراچی میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد سے متعلق حتمی فیصلہ کل کرے گا۔

سندھ حکومت اور صوبائی الیکشن کمشنر کی جانب سے الیکشن کمیشن کو کراچی اور حیدرآباد میں بلدیاتی انتخاب کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔

وزارت داخلہ کی جانب سے بھی کراچی میں بلدیاتی انتخابات پر الیکشن کمیشن کو بریفنگ دی گئی۔ سندھ حکومت نے کراچی میں بلدیاتی انتخابات مزید تین ماہ ملتوی کرنے کی سفارش کردی۔

الیکشن کمیشن کا اہم انٹرنل اجلاس کل دو بجے اسلام آباد طلب کرلیا گیا۔ الیکشن کمیشن کل کراچی میں بلدیاتی انتخابات سے متعلق الیکشن ٹریبونل حتمی فیصلہ کرے گا۔

پولیس نفری دستیاب نہیں

اس حوالے سے  آئی جی سندھ کی رپورٹ الیکشن کمیشن کو بھیج دی گئی ہے جس میں کہا گیا  ہے کہ کراچی ڈویژن میں بلدیاتی الیکشن کرانے کے لیے زیادہ نفری درکار ہے، ہر پولنگ اسٹیشن میں 4 سے 8 پولیس اہلکار درکار ہیں جب کہ پولیس نفری سیلاب کی وجہ سے 3 ماہ تک دستیاب نہیں ہے۔

سندھ حکومت کی طرف سے بھیجے گئے خط میں بتایا گیا ہے وزارت داخلہ کی جانب سے 5 ہزار اہلکار سندھ پولیس سے مانگے گئے تھے، یہ 5 ہزار پولیس اہلکار اسلام آباد میں آئی جی اسلام آباد کے ماتحت ہیں۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کراچی اور حیدرآباد میں تین مرتبہ بلدیاتی انتخابات ملتوی کرچکا ہے۔

مزید پڑھیں:  مسائل کے حل کیلئے تمام اسٹیک ہولڈرز سے گرینڈ ڈائیلاگ کی ضرورت ہے، وزیراعظم

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.