بھارت میں زہریلی شراب پینے سے 31 افراد ہلاک

متعدد افراد بینائی سے محروم ہوگئے

39

پولیس حکام کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے دارالحکومت پٹنہ، ضلع سارن میں زہریلی شراب پینے سے متعدد افراد کی حالت غیر ہوگئی۔
شراب پینے سے متاثرہ افراد کو الٹیاں شروع ہونے پر ہسپتال منتقل کیا جارہا تھا جس میں سے کئی راستے میں دم توڑ گئے۔سینئر پولیس افسر سنتوش کمارکے مطابق متعدد افراد اسپتال میں زیرعلاج ہیں جو زہریلی شراب کی وجہ سے بینائی سے محروم ہوگئے ہیں۔واقعے کے بعد پولیس نے علاقے میں شراب کی غیرقانونی دکانوں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا جس میں گزشتہ 48 گھنٹوں کے دوران 126 ملزمان کو حراست میں لیا گیا جبکہ دو مقدمات بھی درج کیے ہیں۔بھارتی حکام کے مطابق بہار میں 2016 سے شراب کی فروخت پر پابندی ہے جبکہ بہار کے علاوہ بھارت کی دیگر ریاستوں میں بھی زہریلی شراب پینے سے ہلاکتوں کے واقعات کے بعد شراب کی فروخت پر پابندی لگائی جاچکی ہے۔

مزید پڑھیں:  ایم کیو ایم پاکستان، ایم کیو ایم لندن کے راستے پر چل پڑی ہے، وزیراعلیٰ سندھ
جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.