کپڑوں سے مختلف داغ دور کرنے کے لئے یہ طریقے آزمائیں

257

بچے ہویا بڑے کتنی ہی احتیاط کرلیں کھاتے ہوئے داغ لگ ہی جاتے ہیں ایسا اس وقت زیادہ ہوتا ہے جب آپ کسی دعوت میں مدعو کئے گئے ہوں کیوںکہ ایسی جگہوں پرکھانا لیتے وقت رش زیادہ ہوتا ہے تو کھانا گرنے کا خطرہ زیادہ رہتا ہے۔ اور اس وقت اسے صاف کرنا بھی مشکل ہوتا ہے۔

ماہرین کا اس ضمن میں یہ کہنا ہے کہ جب بھی کپڑوں پر داغ لگ جائے اور آپ گھر سے باہر ہوتو پہلا کام یہ کریں کہ اس پر لگے کھانےکے ذرات کوکسی ٹشویا کپڑے سے صاف کرلیں تاکہ اس پر صرف داغ ہی موجود رہے اور گھر آکر فوراً داغ کو صاف کر لیں ورنہ وقت گزرنے کے ساتھ یہ پکے ہو جائیں گے۔

کھانے کےداغ  کی تین اقسام ہیں ان میں پروٹین، ٹینن اورگریس شامل ہے۔ اور اس حوالے سے ماہرین کا یہ کہنا ہے کہ پہلے ان کے بارے میں جان لیں کہ یہ کون سے داغ ہیں، اس طرح اسے صاف کرنے میں کافی مدد ملے گی۔ داغوں کو صاف کئے بغیر انہیں مشین میں دھونے سے گریز کریں ورنہ یہ داغ مزید اچھی طرح سے صاف نہیں ہوں گے۔

ٹینن کے داغوں میں چائے، کافی، جوس، چاکلیٹ اور مصالحہ جات جیسے کیچپ، سرسوں اور گروی شامل ہے۔

پروٹین میں گوشت اور دودھ سے بنی اشیاء کے داغ ہوسکتے ہیں جیسی دہی یادودھ یا ماہرین کا کہنا ہے اگر آپ کسی داغ کو صاف کریں وہ سفید دھبہ چھوڑ دیں تو جان لیں کہ یہ پروٹین کے داغ ہیں۔

مزید پڑھیں:  عرق گلاب سے خوبصورتی بھی صحت بھی

گریس جیسا کہ نام سے ظاہر ہورہا ہے یہ چکنائی کے داغ جیسے تیل کے ہوتے ہیں بشمول سلاد، ڈریسنگ اور مکھن وغیرہ کے داغ۔

ان سب داغوں کے لئے پہلے ایک اچھا ڈیٹرجنٹ کا انتخاب کریں تاکہ اسے پہلے صاف کیا جائے۔

ٹینن کے داغوں کے لئے سرکہ اور پانی کا محلول تیار کرکے داغوں پر استعمال کریں یا ایسی پروڈکٹ خرید لیں جن یہ اجزاء موجود ہوں یہ ٹینن کے داغوں کو صاف کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

پروٹین ار چکنائی کے داغوں کے لئے برتن دھونے والے ڈٹرجنٹ یا لیکویڈ کا انتخاب کریں کیونکہ یہ اسی کام کے لئے بنائیں جاتے ہیں۔ اور اسے ہمیشہ ٹھنڈے سے دھوئیں۔

کپڑوں سے تیل کے نشانات صاف کرنے کے لئے کارن اسٹارچ، کارن فلوریا بیبی پاؤڈرآزمائیں۔ اس مقصد کے لئے داغ پر یہ پاؤڈرڈال کرکچھ دیر کے لئے چھوڑ دیں پاؤڈر چکنائی کو جذب کر لے گا اسے صاف کر کے اچھے سے ڈٹرجنٹ سے دھولیں۔

 کوشش کریں کسی بھی محلول کو داغ پر استعمال کرنے سے قبل اسے کسی اور جگہ استعمال کر کے دیکھ لیں کہ یہ کپڑوں پر نقصان کا باعث تو نہیں نے گا۔ یا اس کی تھوڑی سی مقدار داغ پر لگا کرنرم برش سے رگڑیں داغ صاف ہوجائیں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.